10365485_10152932397176839_8640116110994065836_o (1)

عدیل احمد آسی

یوم یکجہتی کشمیر پر انڈین ایمبیسی ڈنمارک کے باہر زبردست مظاہرہ

تحریک کشمیر ڈنمارک کے زیر اہتمام 5 فروری 2016 یوم یکجہتی کشمیر پر انڈین ایمبیسی ڈنمارک کے باہر ایک احتجاجی مظاہرہ کی کال دی گئی۔اس مظاہرہ میں ڈنمارک میں بسنے والی تمام سیاسی،سماجی،ثقافتی اور مذہبی جماعتوں نے شرکت کی۔سردی اور بارش کا موسم بھی مظاہرین کا عزم متزلزل نہ کر سکا اس مظاہرہ میں ورکنگ ڈے کے باوجود بچوں،بوڑھوں،نوجوانوں اور خواتین نے بڑی تعداد میں شرکت کی مظاہرین نے کشمیر کی آزادی کے لئے فلک شگاف نعرے لگائے۔انڈین حکام چپکے چپکے شرکاء و مقررین کی تصاویر بناتے رہے مظاہرے کے دوران انڈین جھنڈا شرم سے جھکا رہا مظاہرے کا باقاعدہ آغاز ڈنمارک اور عالم اسلام کے مشہور قاری علامہ اسماعیل فرید تونسوی کی خوبصورت آواز میں تلاوت قرآن پاک سے کیا گیا۔اس کے بعد تحریک کشمیر ڈنمارک کے صدر عدیل احمد آسی نے تمام شرکاء کو خوش آمدید کہا اور کشمیریوں کی جدوجہد آزادی میں اپنا حصہ ڈالنے پر ان کا شکریہ ادا کیا اور یوم یکجہتی کشمیر کے پس منظر اور اہمیت پر روشنی ڈالی ریڈیو پاک لنک کے ہوسٹ شیخ ظفر نے انڈین ظلم کو اجاگر کرنے کے لئے ترانہ کشمیر پیش کیا۔کشمیر سوسائٹی ڈنمارک کے راہنما راجہ انور نے اپنے خطاب میں کہا کہ کشمیر اب تنہا نہیں ہم اس کے ساتھ ہیں۔پاکستان کمیونٹی کے صدر راجہ غفور افضل نے انڈین ایمبیسی کے حکام کو للکارتے ہوئے کہا تم ہمیں ڈرا،دھمکا کر جدوجہد حریت کو دبا نہیں سکتے۔پیپلز پارٹی ڈنمارک کے صدر جناب مجیب قریشی نے کہا آج ہم پرزور اپیل کرتے ہیں کہ کشمیر کے مسئلہ کو اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کیا جائے۔فقہ جعفریہ کے نمائندہ راجہ طارق نے کہا ہمیں انڈین فلموں سمیت تمام بھارتی مصنوعات کا کشمیر کی آزادی تک مکمل بائیکاٹ کرنا چاہئے۔

ڈنمارک کے تیسرے بڑے شہر اوڈینسے سے پاکستان کلچرل اینڈ سٹڈی سرکل کے صدر شیخ ظہیر نے اپنے خطاب میں کشمیریوں سے بھرپور یکجہتی کا اظہار کیا۔ڈنمارک کے بزرگ کشمیری راہنما اور ممتاز شاعر خواجہ آصف نے کشمیر پر لکھی اپنی نظم پیش کی۔ایس ہائے اسلامک سنٹر کے راہنما راجہ بابر نے اپنے پرجوش خطاب میں کشمیری بیٹیوں کی قسم کھا کر بھارتی سفارت خانے کو للکارا اور کہا اگر ہماری شرافت کی زبان سمجھ نہ آئی تو ہمیں دوسری زبان بھی آتی ہے۔سویڈن سے جماعت اسلامی کے ورکر مرزا حماد ایڈووکیٹ نے کہا کہ کشمیریوں کو آزادی سے کم کوئی حل قابل قبول نہیں۔پی ٹی آئی ڈنمارک کے صدر جناب چوہدری ایوب نے کہا کہ پاکستانی ریستورانوں کے ساتھ سے انڈین کا نام ہٹایا جائے انہوں نے مزید کہا کہ شرم کی بات ہے کہ ڈنمارک میں موجود تمام انڈین ہوٹلوں کے مالک پاکستانی ہیں۔ڈنمارک کے دوسرے بڑے شہر اور کوپن ہیگن سے 400 کلومیٹر پر واقع آر ہاؤس سے آئے ہوئے پاکستانی کمیونٹی آر ہاؤس کے صدر مرزا نوازصاحب نے اپنے خطاب میں فرمایا کہ کشمیریوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی آزادی کا سورج عنقریب طلوع ہو گا۔

کوپن ہیگن کی سابقہ خاتون سٹی کونسلر محترمہ لبنٰی الہٰی نے اپنی تقریر میں کشمیریوں پر ہونے والے ظلم کے اعدادوشمار پیش کئے۔مسلم لیگ ن کے صدر راجہ شناعت نے مودی کو دہشت گرد قرار دیا اور اپنی حکومت سے مطالبہ کیا کی کشمیر کی آزادی تک انڈیا سے مذاکرت(کسی اور معاملے میں)نہ کئے جائیں۔پاک کشمیر سوشل فورم کے جنرل سیکرٹری وسیم عالم بٹ نے کہا کہ انشاء اللہ کشمیر پاکستان کا حصہ بن کر رہے گا۔

مقامی ڈینش پارلیمنٹ کے رکن عباس رضوی نے انگلش میں اپنے خطاب میں کہا بھارت کو فورََا کشمیر سے اپنی فوج کا انخلا کرنا چاہییے۔

پی ٹی آئی کشمیر ونگ ڈنمارک کے نوجوان صدر راجہ ریحان خان نے ڈینش زبان میں تقریر کرتے ہوئے کہا کہ ہم آخری دم تک کشمیریوں کے ساتھ کھڑے رہیں گے اور ہم ان کو یہ پیغام دیتے ہیں کہ ہم ڈنمارک میں بھی ان کا درد محسوس کرتے ہیں۔مسلم لیگ ق کے صدر چوہدری شوکت علی نے کہا کہ ہم کشمیریوں پر ظلم و جبر روارکھنے پر دنیا کی سب سے بڑی نام نہاد جمہوریت پر تھوکتے ہیں۔پاکستان سوسائٹی ڈنمارک کے  صدر اور کوپن ہیگن کے سابقہ سٹی کونسلر چوہدری ولائیت خان نے کہا کہ مسئلہ کشمیر میں اقوام متحدہ نے اپنا کردار بھرپور طریقے سے ادا نہیں کیا ہے۔اس ادارے نے اپنا مقام کھو دیا ہے۔تنظیم اسلامی ڈنمارک کے صدر جناب امتیاز احمد سویہ نے قاضی حسین احمد مرحوم کو یوم یکجہتی کشمیر  پہلی دفعہ منانے اور اس کی اپیل دنیا بھر سے کرنے پر ان کو بھرپور خراج تحسین پیش کیا۔آماگر اسلامک سنٹر کے امام علامہ تنویر حسین نے شرکاء کو احساس دلایا کہ کشمیریوں کے لئے کھڑے ہونا ہمارا دینی فریضہ ہے۔ڈنمارک کی مشہور سماجی،سیاسی شخصیت اور تحریک کشمیر ڈنمارک کے اہم راہنماء میاں منیر احمد نے کہا کہ کشمیریوں کا خون رائیگاں نہیں جائے گا اور اب یہ مسئلہ انشاء اللہ گمنائیوں میں نہیں رہے گا۔میاں منیر احمد نے کشمیریوں کے حق میں خوب نعرے لگوائے۔ڈینش پاکستان افیئر کونسل کے صدر اور تحریک کشمیر ڈنمارک کے اہم راہنما ء جناب انصرحسین نے شرکاء کے سامنے کشمیریوں کے لئے حق خود ارادیت کی قرارداد پیش کی  اس قرارداد کے حق میں تمام شرکاء نے ہاتھ کھڑے کئے اور بھرپور حمایت کی۔

آخر میں ڈنمارک کی سب سے معزز شخصیت اور نامور عالم دین قاری و خطیب  اور سب سے بڑے پاکستان اسلامک سنٹر ”مسلم کلچرل سنٹر“ ویسٹربرو کے امام علامہ ظہیر بٹ صاحب نے تحریک کشمیر کی کاوشوں کو سراہا اور کشمیر کی جلد آزادی کے لئے دعا کروائی۔

مظاہرے کے اختتام پر جناب عدیل احمد آسی نے شرکاء کا دوبارہ شکریہ ادا کیا اور تحریک کشمیر کے راہنماء میاں منیر احمد،انصرحسین اور عدیل احمد آسی نے بھارتی سفارت خانے میں قرارداد پیش کی جسے بھارتی سفارت خانے کے پوسٹ بکس میں ڈال دیا گیا۔

Advertisements

Comments are closed.